مردہ وہیل کے پیٹ سے 40کلو پلاسٹک برآمد

whale.jpg

فلپائن میں بھوک کی وجہ سےہلاک ہونے والی وہیل مچھلی کے پیٹ سے 40 کلو پلاسٹک نکلی ہے، رضاکاروں نے اسے اپنی نوعیت کا بدترین کیس قراردیاہے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ماہی گیری کے سرکاری ادارے کا کہنا تھا کہ چونچ والی وہیل ہفتے کو فلپائن کے جنوبی صوبے کومپوسٹیلا ویلی میں ایک دن قبل پھنس کر ہلاک ہوئی تھی۔

جس کے بعد مذکورہ ادارے اور ماحولیاتی ادارے نے وہیل کی لاش کا معائنہ کیا تو اس کے پیٹ سے 40 کلو پلاسٹک برآمد ہوا جس میں چاول کی بوریاں اور شاپنگ بیگ شامل تھے۔

ماہرین کاکہنا ہے کہ وہیل بھوک کی وجہ سے ہلاک ہوئی کیوں کہ پیٹ میں پلاسٹک بھری ہونے کی وجہ سے وہ خوراک نہیں کھا سکی۔

واضح رہے کہ ماحولیاتی تنظیمیں فلپائن کو دنیا کی بدترین سمندری آلودگی والا ملک قرار دیا ہے، جہاں ایک مرتبہ استعمال ہونے والی پلاسٹک کا استعمال بہت عام ہے۔

اسی قسم کی آلودگی کی شرح مشرقی ایشیا کے دیگر ممالک میں بھی انتہائی بلند سطح پر ہے جس کی وجہ سے آبی حیات مثلاً وہیل اور کچھوے وغیرہ انسانوں کا پھینکا گیا کچرا کھا کر ہلاک ہوجاتے ہیں۔

Share this post

PinIt

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

scroll to top