ڈیولیئرز کو آؤٹ کرنے والا 19سالہ بولر کون ہے؟

UmerKhan.jpg

کرکٹ کی دنیا میں خود کو متعارف کرانے کے لئے بعض کھلاڑیوں کو برسوں لگ جاتے ہیں لیکن کسی کسی پر قسمت کی دیوی ایسی مہربان ہوتی ہے کہ وہ صرف ایک بال ہی اُس کو راتوں رات اسٹار بنادیتی ہے۔

لاہور قلندرز کے خلاف کراچی کنگز کو 22 رنز سے شکست ہوئی لیکن اسپنر عمر خان نے لاہور قلندرز کے مسٹر 360 اے بی ڈیولیئرز کو آؤٹ کرکے سب کو اپنی جانب متوجہ کرلیا ہے۔ میچ میں عمر خان نے 25 رنز دے 2 وکٹیں لیں۔

عمرخان کا کہنا ہے کہ ڈیولیئر کو بولنگ کرانا میرا خواب تھا، خوشی ہے کہ آؤٹ بھی کر دیا۔

5 اگست 1999ء کو پیدا ہونے والے عمر خان کا تعلق ایک غریب گھرانے سے ہے، وہ راولپنڈی میں پیدا ہوئے لیکن وہ فاٹا کے علاقے میں پلے بڑھے، ان کے والد کی ٹائر پنکچر کی دکان ہے اور وہ انہیں پرانے ٹائروں کو وکٹ بناکر گنٹھوں بولنگ کی پریکٹس کرتے تھے۔

انہیں پہلی مرتبہ 2014ء میں پی سی بی کوچز نے پیپسی کرکٹ اسٹارز انڈر19 پروگرام میں فاٹا کے لئے منتخب کیاجس کے بعد 2016ء میں اُنہیں سری لنکا میں ہونے والے انڈر19 ایشیا کپ کے لئے پاکستان ٹیم کا حصہ بنایا گیا۔

عمر خان کے میچز کی فہرست بہت زیادہ طویل نہیں ہے، انہوں نے ایک فرسٹ کلاس، ایک لسٹ اے، اور دو ٹی20 میچز کھیلے ہیں۔

فرسٹ کلاس میچ کی دو اننگز میں اُن کی وکٹوں کی تعداد سات ہے، بہترین بولنگ ایک اننگز میں 37رنز دے کر سات وکٹیں ہیں۔

لسٹ اے میچ میں وہ کوئی وکٹ نہ لے سکے تاہم دو ٹی20 میچز میں تین وکٹیں لی ہیں، بہترین بولنگ 25رنز کے عوض 2 وکٹیں ہے۔

کراچی کنگز کے ابتدائی 20 کھلاڑیوں کے اسکواڈ میں عمر خان کو منتخب نہیں کیا گیا تھا تاہم 21 ویں کھلاڑی کے انتخاب کی اجازت ملنے پر اُنہیں ٹیم میںجگہ دی گئی تھی۔

کراچی کنگز کے کوچ مکی آرتھرعمر خان کی پرفارمنس کو شاندار قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اُس نے اپنی بولنگ سے کافی متاثر کیا،وہ سیکھنا چاہتا ہے اور بالنگ میں کافی مہارت رکھتا ہے۔

کرکٹ ویب سائٹ سے بات کرتے ہوئے عمر خان کا کہنا تھا کہ سینئرز نے مجھےبتایا تھا کہ ڈیولیئرز کو شاٹ کھیلنے کے لئے جگہ مت دینا، جیسے ہی وہ پیچھے ہٹے بیچ میں کھلانا وہ خود بخود وکٹ دے دے گا اور میں نے ایسا ہی کیا۔

Share this post

PinIt

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

scroll to top