سمندر پار پاکستانیوں کے لیے سرمایہ کاری کا موقع

Pakistan-Bano-Certificate3.jpg

اوپن فنانشل مارکیٹ میں ڈالر کی بالادستی روکنے اور غیر ملکی زر مبادلہ کے ذخائر میں اضافے کے لیے حکومت پاکستان کی جانب سے سمندر پار بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی طرف سے قومی خدمت اور تعمیر پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے ’پاکستان بنائو سرٹیفکیٹ‘ کا اجراء کیا گیا ہے ۔

حکومت پاکستان کی جانب سے کم قیمت سرمایہ کاری پر یہ پہلی خود مختار اسکیم ہے جس سے سمند رپار پاکستانیوں کو اپنے ملک کی ترقی و خوشحالی میں اہم کردار ادا کرنے اور اچھا منافع حاصل کرنے کے نادر مواقع حاصل ہوں گے ۔

حکومت پاکستان کے لیے ڈیموں کی تعمیر ، سڑکوں کے جال بچھانے ، بجلی کی پیداوار اور ٹرانسمیشن پروجیکٹس وغیرہ جیسے انتہائی اہم و نازک انفرااسٹرکچر پروجیکٹس کی تکمیل کے لیے سرمایہ کاری کا سب سے بڑا ماخذ دنیا بھر میں مقیم پاکستانیوں کی ترسیلات زر ہوتی ہیں جن کا شمار دنیا کے چھٹے سب سے بڑے ذرائع آمدن میں ہوتا ہے اور یہ ہماری مجموعی برآمدات کے 80فیصد کے مساوی ہیں ۔

پاکستان بنائو سرٹیفکیٹس 3اور 5سال کے لیے دستیاب ہیں جن پر منافع کی شرح بالترتیب چھ اعشاریہ دو پانچ فیصداورچھ اعشاریہ سات پانچ فیصد ہے جن کی ادائیگی ہر 6ماہ بعد ہو گی ۔

اس میں منافع کی شرح یو ایس بانڈز کوپن سے زیادہ ہے جو 3 اور5 سال کے لیے شرح منافع بالترتیب دو اعشاریہ چار نو فیصداوردو اعشاریہ آٹھ سات پانچ دیتا ہے جبکہ کے ایس اے بانڈز پر سرمایہ کاری کی شرح منافع 3اور 5سال کے لیے بالترتیب 2 اعشاریہ89 اورتین اعشاریہ پانچ سے چار اعشاریہ صفر فیصد ہے۔

سرمایہ کاری کون کر سکتا ہے ؟
پاکستان بنائو سرٹیفکیٹس اسکیم خاص طور پر بیرون ملک مقیم سمندر پار پاکستانیوں کے لیے متعارف کروائی گئی ہے جنہیں درج ذیل کسی ایک یا زائد دستاویزات اور بیرون ملک اپنا بینک اکائونٹ رکھنے والے پاکستانی خرید سکیں گے :

۔کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ رکھنے والے سمندر پار پاکستانی

۔اوورسیز پاکستانی قومی شناختی کارڈ رکھنے والے پاکستانی خواتین و حضرات

۔پاکستان اور یجن کارڈ رکھنے والے سمندر پار پاکستانی

سرمایہ کاری کی کم از کم رقم

ان سرٹیفکیٹس پر کم سے کم سرمایہ کاری 5ہزار ڈالر ہے جبکہ زیادہ کی کوئی حد نہیں ۔

فنڈز کی منتقلی

سمندر پار مقیم پاکستانی سرمایہ کاری مرد یا خاتون کو بیرون ملک اپنے اکائونٹ سے سرمایہ کاری کی رقم اسٹیٹ بینک آف پاکستان اکائونٹ میں منتقل کرنی ہو گی ۔ سرمایہ کاری تفصیلات کی تکمیل پر اسٹیٹ بینک آف پاکستان نیو یارک کی طرف سے پورٹل پر مطلع کیا جائے گا ۔

رکنیت سازی کا طریقہ کار
پاکستان بنائو سرٹیفکیٹس کی رکنیت سازی خاص طور پر ڈیزائن کردہ ویب پورٹل کے ذریعے پیش کی جا رہی ہے ۔ سرمایہ کاروں کو سب سے پہلے پورٹل پر اپنے آپ کو رجسٹر کرانا ہو گا اور کامیاب رجسٹریشن ہونے کے بعد اپنی سرمایہ کاری اور بینک اکائونٹ کی تفصیلات دینی ہوں گی ۔ سرٹیفکیٹس ،اسٹیٹ بینک آف پاکستان اکائونٹ میں فنڈز کی وصولی پرسرمایہ کاروں کے آن لائن پورٹل اکائونٹ پر برقی طور پر جاری کیے جا رہے ہیں ۔ سرمایہ کاروں کوسرٹیفکیٹس کے اجراء کی کنفرمیشن اورپورٹل پر اکائونٹ تفصیلات ای میل کے ذریعے موصول ہوں گی ۔ سرمایہ کار اپنے متعلقہ یوزرIDاور پاس ورڈ کے ذریعے ویب پورٹل پر رسائی حاصل کر کے اپنی درخواست کا اسٹیٹس ملاحظہ کر سکتے ہیں کہ اس پر کتنی کارروائی ہو چکی ہے ۔

اہم فوائد
پاکستان بنائو سرٹیفکیٹس کا موازنہ دیگر بانڈز سے کیا جائے تو یہ انتہائی منافع بخش ہے ۔ منافع سہ ماہی بنیاد پر ہے ، مدت ِتکمیل پر منافع کی ادائیگی ڈالر اور روپے دونوں میں ہو سکے گی ۔ فائنل پریمیم پر روپے کی کرنسی میں منافع لینے کی صورت میں اضافی 1%منافع کی سہولت ہو گی ۔ کسی بھی وقت انکیشمنٹ کروائی جا سکتی ہے تاہم اجراء کے ایک سال کے اندر ڈالر میں انکیشمنٹ کی صورت میں 1%جرمانے کی کٹوتی ہوگی ۔ اس منافع پر زکوٰۃ اور ود ہولڈنگ ٹیکس لاگو نہیں ہو گا ۔

سادہ اور آسان طریقہ کار نے سرمایہ کاروں کے لیے بے انتہا فوائد مہیا کیے ہیں ۔ انکیشمنٹ درخواست پاکستان بناؤ سرٹیفکیٹ یا پی بی سی پورٹل کے Redemption Moduleکے ذریعے آن لائن جمع کرائی جا سکتی ہے ۔

’میعادی منافع‘اور’ اصل زر کی واپسی‘سرمایہ کاری کے وقت سے سرمایہ کاروں کے اکائونٹس میں جمع کی جائے گی ۔

Share this post

PinIt

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

scroll to top