پاکستان ون ڈے بھی ہار گیا

PAKVs-AUS-1.jpg

تیسرے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں آسٹریلیا نے پاکستان کو 80 رنز سے ہراکر پانچ میچوں کی سیریز میں تین۔صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل کرلی۔

ابوظبی میں آسٹریلیا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 6 وکٹوں کے نقصان پر 266 رنز بنائے، جس کے جواب میں پاکستان کی پوری ٹیم 186 رنز بناکر آوٹ ہوگئی۔

ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے آسٹریلوی ٹیم کی اننگز کا آغاز اچھا نہ رہا اور 20رنز کے مجموعی اسکور پر پہلے عثمان خوانہ بغیر کھاتہ کھولے اور پھر شان مارش 14رنز کی بناکر پویلین لوٹ گئے۔

مشکل صورتحال میں کپتان آرون فنچ اور ہینڈزکومب نے تیسری وکٹ کی شراکت میں 84 رنز بناکر ٹیم کی پوزیشن کو مستحکم کیا، لیکن ہینڈزکومب 47 رنز پر حارث سہیل کی گیند پر کلین بولڈ ہوگئے۔

نئے بیٹسمین اسٹوئنس صرف 10 رنز بناسکے اور عماد وسیم کی گیند پر کلین بولڈ ہوکر پویلین کی راہ لی۔

اگلے آوٹ ہونے والے کھلاڑی ان فارم بیٹسمین آرون فنچ تھے جو 90 رنز بناکر یاسر شاہ کی گیند پر حارث سہیل کو کیچ دے بیٹھے، وہ صرف 10 رنز کے فرق سے مسلسل تین سنچریاں بنانے والے پہلے آسٹریلوی کھلاڑی کا اعزاز اپنے نام نہ کرسکے۔

فنچ نے پہلے ون ڈے میں 116 اور دوسرے ون ڈے میں ناقابل شکست 153رنز بنائے تھے۔

میکسویل نے صرف 55 گیندوں پر 71 رنز کی برق رفتار اننگز کھیل کو ٹیم کے اسکور کو تیزی آگے بڑھانے میں مدد کی، یوں آسٹریلیا نے پاکستان کو جیت کے لئے 267رنز کا ہدف دیا۔

نواجوان بولر محمد حسنین صرف پانچ اوورز میں 50 رنز دے کر سب سے مہنگے بولر ثابت ہوئے، یہ ان کے ون ڈے کیریئر کا دوسرا میچ ہے لیکن بدقسمتی سے وہ اب تک کوئی بھی لینے میں کامیاب نہیں ہوسکے ہیں۔

عثمان شنواری، جنید خان، یاسر شاہ، عماد وسیم اور حارث سہیل نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

ہدف کے تعاقب میں پاکستان ٹیم کو اننگز کی ابتدا ہی سے مشکلات کا سامنا رہا اور کھیل کے اختتام تک وہ اس صورتحال سے باہر نہ آسکی۔

14 کے اسکور پر شان مسعود 2 رنز بنا کر آوٹ ہوئے تو صرف 2 رنز کے اضافے پر حارث سہیل ایک رن بناکر پویلین لوٹ گئے اور پھر دوسرے ون ڈے میں سنچری بنانے والے وکٹ کیپر بیٹسمین رضوان احمد بغیر کوئی رن بنائے گراونڈ سے باہر چلے گئے۔

پیٹ کومنز نے تین ٹاپ آرڈرز بیٹسمینوں کو آوٹ کرکے پاکستان کی بیٹنگ لائن کی تباہی میں مرکزی کردار ادا کیا، جس پر انہیں مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

نئے بیٹسمین شعیب ملک نے امام الحق کے ساتھ مل کر آسٹریلوی بولرز کے خلاف کچھ مزاحمت دکھائی لیکن جب اسکور 75رنز ہوا تو امام الحق 46 رنز بناکر کپتان کا ساتھ چھوڑ گئے۔

شعیب ملک 31 رنز بناکر ہمت ہار گئے تو عمر اکمل نے 36 رنز پر ہی اکتفا کیا اورعماد وسیم نے 43 رنز بناکر ڈریسنگ روم کی راہ لی۔

یوں پاکستان ٹیم 44 اعشاریہ 4 اوورز میں 186 رنز بناسکی اور آسٹریلیا نے 80 رنز سے نہ صرف میچ جیت لیا بلکہ سیریز میں بھی تین۔صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل کرلی۔

آسٹریلی کی طرف سے زامپا نے 4، پیٹ کومنز نے 3 جبکہ بہرینڈروف، لیون اور میکسویل نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

چوتھا ون ڈے اسی گراونڈ پر جمعہ کو کھیلا جائے گا۔

Share this post

PinIt

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

scroll to top